کتاب پالیسیاں اور ضوابط
سیکشن 7000 - طلباء
عنوان ضابطہ - طالبعلم/طالبہ کے اخراج کی اپیل کی سماعت سے متعلق سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کا طریقۂ کار
کوڈ 4-745
حیثیت فعال
اختیار کردہ 26 اپریل، 2017
آخری مرتبہ دہرایا گیا بدھ، 04 مارچ، 2020

طلباء
ضابطہ 4-745


طالبعلم/طالبہ کے اخراج کی اپیل کی سماعت سے متعلق سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کا طریقۂ کار
I. مقصد سکول بورڈ کی تین رکنی انضباطی کمیٹی کے سامنے طالبعلم/طالبہ کے اخراج کی اپیل کی سماعت کا طریقہ کار درج ذیل دستور المعل کے تحت ہو گا۔ اخراج کی اپیل کی سماعت ایک تادیبی کاروائی نہیں ہے۔ تاہم، سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی ان رسمی ثبوتوں یا طریقہ کار پر عمل کرنے کی پابند نہیں جو قانونی عدالت میں لاگو ہوتے ہیں۔ درج ذیل طریقہ کار وہ عمومی رہنما اصول ہیں جنہیں سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کا چیئرمین سماعت کو مؤثر بنانے کیلیئے تبدیل کر سکتا/سکتی ہے یا جہاں یہ سکول ڈویژن یا طالبعلم/طالبہ کے بہترین مفاد میں ہے۔
II. طریقہ کار
A. یہ طریقۂ کار ان طلباء اور/یا ان کے نمائندوں کیلیئے دﺳﺗﻳﺎﺏ ہے جنہوں نے دفتر برائے سٹوڈنٹ منیجمنٹ و الٹرنیٹو پروگرامز (OSMAP) کے اخراج کی سفارش کے خلاف اپیل کی تحریری درخواست جمع کرائی اور سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے سامنے سماعت کی درخواست کی تھی۔ تحریری اپیل لازمی طور پر OSMAP کو جمع کرائی جانی چاہیے جیسا کہ ضابطہ 745-6، "طویل المدت معطلی اور اخراج کی سکول بورڈ کو اپیلیں" اور 731-1، "طالبعلم/طالبہ کے معاملات کی اپیل"۔
B. سماعت ہونے سے کم از کم پانچ کاروباری دن قبل، طالبعلم/طالبہ اور والد یا والدہ (والدین)/ سرپرست (سرپرستان) OSMAP کو تصدیق شدہ اور معمول کی ڈاک کے ذریعے درج ذیل سے مطلع کریں گے:
1. سماعت کی تاریخ، وقت اور مقام؛
2. سماعت کے طریقہ کار کے دستور المعل؛ اور
3. یہ کہ طالبعلم/طالبہ اور والد یا والدہ (والدین)/ سرپرست (سرپرستان) سماعت کیلیئے قانونی مشیر رکھ سکتے ہیں۔
C. تسلسل کی درخواست۔ والد والدہ(والدین)/سرپرست(سرپرستان) یا بالغ طالبعلم/طالبہ سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی سے ایک مزید طے شدہ سماعت کی درخواست کر سکتا/سکتی ہے۔ تاہم، ایسے تسلسل کی منظوری صرف اچھے مقصد کیلیئے دی جائے گی، سکول بورڈ کے چیئرمین کی منظوری سے یا چیئرمین کی غیر حاضری کی صورت میں سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے چیئرمین کی منظوری سے درج ذیل رہنما اصولوں کے تحت:
1. تسلسل کی تحریری درخواست مقررہ وقت کے اندر OSMAP کے سامنے درخواست کی وجوہات کے ساتھ پیش کی جانی چاہیے۔ OSMAP کا ڈائریکٹر درخواست کا جائزہ لے گا/گی اور تسلسل سے متعلق سکول بورڈ کے چیرمین کو یا سکول بورڈ چیئرمین کی غیر حاضری میں سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے چیئرمین کو تسلسل کی سفارش کرے گا/گی۔
2. تسلسل کے اچھے مقاصد میں عام طور پر طالبعلم/طالبہ، طالبعلم/طالبہ کے والد والدہ(والدین)/سرپرست(سرپرستان) یا طالبعلم/طالبہ کے وکیل یا اٹارنی کی طرف سے طے شدہ تنازعات شامل نہیں ہوتے۔ سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی، OSMAP، سکول انتظامیہ اور سٹاف، اور ڈویژن کونسل کو طے شدہ تاریخ پر موجود ہونے کے لیے تمام سہولیات مہیا کرنی چاہیے اور، اس لیے، ایسے ہی طالبعلم/طالبہ اور طالبعلم/طالبہ کے نمائندے سے توقع کی جاتی ہے۔
3. طالبعلم/طالبہ اور والد یا والدہ (ﻭﺍﻟﺩﻳﻥ)/ ﺳﺭﭘﺭﺳﺕ (سرپرستان)، اٹارنی یا دیگر نمائندوں کو لازمی طور پر قانون یا سکول بورڈ پالیسیوں اور ضوابط کے نافذ کردہ ٹائم لائن سے دستبردار ہونا ہو گا تاکہ سماعت کے اوقات کو نافذ کیا جا سکے۔
D. والد یا والدہ/سرپرست/نمائندہ کا اخراج کا پیکٹ جس میں سماعت سے متعلق تمام مواد موجود ہے والد یا والدہ/سرپرست/نمائندہ کیلیئے OSMAP پر سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کی طے شدہ سماعت سے کم از کم تین دن پہلے دﺳﺗﻳﺎﺏ ہو گا۔ اخراج کے پیکٹ میں درج ذیل شامل ہو سکتی ہیں، لیکن ان چیزوں تک محدود نہیں:
1. پرنسپل کی اخراج کی سفارش، بشمول مخصوص الزام (الزامات)، خلاف ورزی کی نوعیت اور سفارش کی معاونت کرنے والے حقائق کا خلاصہ؛
2. سکول سٹاف، سکول سیکوریٹی، پولیس یا دیگر حکومتی اہلکاروں بشمول دھمکیوں کی جانچ، کی طرف سے طالبعلم/طالبہ کے طرز عمل کی تحقیقات کے واقعات یا دیگر رپورٹیں۔
3. طالبعلم/طالبہ کے طرز عمل پر سٹاف، طلباء، پولیس یا دیگر گواہان کے حاصل کردہ بیانات۔ طلباء کو انتقام سے بچانے کیلیئے اور ایسے طرزعمل کی رپورٹ کرنے کی حوصلہ افزائی کرنے کیلیئے جو پرنس ولیئم کاؤنٹی پبلک سکولز کے "ضابطۂ اخلاق" کی خلاف ورزی کرتا ہے، طالبعلم/طالبہ (طلباء) بطور گواہان کے لیئے گئے بیانات میں ان کی شناخت ظاہر نہیں کی جائے گی؛
4. OSMAP کے سماعتی افسر کے سامنے ہونے والی سماعت کا تحریری ریکارڈ اور سماعتی افسر کی سفارش کی نقل؛
5. کوئی دستاویزات یا دیگر تحریری ثبوت جو OSMAP سماعت میں پیش کیے گئے۔
6. طالبعلم/طالبہ کی تعلیم، حاضری، اور نظم و ضبط کے ریکارڈ، بشمول کسی اس جیسے جرم یا طرزعمل اور گزشتہ مداخلتوں کے ریکارڈ؛ اور
7. کوئی دیگر متعلقہ دستاویزات یا تحریری ثبوت، جو ورجینیا کوڈ § 22.1-277.06(C) میں طے کیے گئے طالبعلم/طالبہ کے قانونی عوامل یا "خصوصی حالات" سے متعلقہ ہیں۔
E. ریاستی اور وفاقی قانون کے تحت طالبعلم/طالبہ کے انضباطی معاملات خفیہ ہیں۔ لہذا، سماعت بند کمرے میں ہو گی اور عوام کیلیئے نہیں ہو گی۔
F. سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کی سماعت، بورڈ پر عائد پابندیوں کی وجہ سے محدود وقت کی اہمیت کی روشنی میں 45 منٹ کیلیئے ہو گی اور یہاں کمیٹی ممبران کو اخراج کے پیکٹ کا سماعت سے قبل دیکھنے کا موقع ہو گا۔ طالبعلم/طالبہ، والد والدہ(والدین)/سرپرست(سرپرستان) اور وکیل کو دوبارہ گواہی دینے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور انہیں ایک سے زیادہ گواہان کی گواہی تحریری طور پر جمع کرانے کی تلقین کی جائے گی خاص طور سے کرداری گواہان کی گواہی۔
G. طالبعلم/طالبہ والد والدہ(والدین)/سرپرست(سرپرستان) یا دیگر ذمہ دار بالغ، بشمول قانونی مشیر کے ساتھ پیش ہو سکتا/سکتی ہے۔ والد والدہ(والدین)/سرپرست(سرپرستان) سماعت کے دوران موجود ہو سکتے ہیں۔ تاہم، طالبعلم/طالبہ کو طالبعلم/طالبہ کے کیس پر پیش کرنے کے مقصد کیلیئے صرف ایک ہی وکیل پیش کرنے کی اجازت ہو گی۔ تمام فریقین، بشمول اٹارنی مہذب رہیں گے اور ذاتی حملوں یا دیگر نامناسب طرز عمل سے باز رہیں گے۔ سکول بورڈ کی تادیبی کمیٹی کے چیئرمین کو اختیار حاصل ہے کہ وہ ان افراد کو باہر نکال دے جو نامناسب طرز عمل میں ملوث ہوں یا سماعت میں خلل کا سبب بنیں۔ قانون سکول بورڈ تادیبی کمیٹی کو مجبور نہیں کرتا کہ ماسوائے محدود حالات کے اٹارنی یا وکیلوں کو سماعت میں شریک کی اجازت دی جائے۔
H. سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کا چیئرمین ایک قاعدہ لاگو کر سکتا/سکتی ہے کہ گواہان اس وقت تک سماعتی کمرے سے باہر رہیں جب تک کہ ان سے معلومات حاصل کرنے کی درخواست نہیں کی جاتی اور تمام طریقۂ کار یا دیگر اعتراضات ڈویژن کونسل کی مدد سے حل کیے جائیں گے۔
I. سماعت کا طریقۂ کار درج ذیل ترتیب سے ہو گا:
1. سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کا چیئرمین فریقین اور گواہان کا تعارف کرائے گا/گی۔
2. سکول پرنسپل اور/یا ڈائریکٹر برائے سٹوڈنٹ منیجمنٹ اینڈ الٹرنیٹو پروگرامز (یا نامزد فرد) انتظامیہ اور/یا OSMAP کے فیصلے پر افتتاحی بیان دیں گے، طالبعلم/طالبہ کے غلط طرزعمل کا خلاصہ بیان کریں گے، پرنسپل کے اخراج کی سفارش کی وجوہات بیان کریں گے، OSMAP سماعتی افسر کی شناخت کردہ خصوصی اور/یا شدید حالات (اگر قابل اطلاق ہیں) کی نشاندہی کریں گے، اور OSMAP کی سفارشات کا تعلق بیان کریں گے۔
3. طالبعلم/طالبہ یا طالبعلم/طالبہ کے وکیل کے پاس ابتدائی بیان دینے کا موقع ہو گا۔ یہ وہ وقت ہے جب طالبعلم/طالبہ/والد یا والدہ/سرپرست/وکیل/اٹارنی سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کو بتا سکتے ہیں کہ وہ سماعت کے کیا نتائج چاہتے ہیں (جسے مختلف نتائج، مختلف حالات، مختلف داخلہ)۔
4. OSMAP، سکول پرنسپل اور سٹاف کے پاس ایک موقع ہو گا کہ وہ کمیٹی کے سامنے پہلے پیش کیے گئے اخراج کے پیکٹ میں موجود ثبوت کے ساتھ نئے ثبوت پیش کر سکیں۔ اس میں طالبعلم/طالبہ کی اپیل کی درخواست میں اٹھائے گئے کسی نئے مسئلے یا حقائق کوئی ایسے جوابی شواہد بھی شامل ہو سکتے ہیں جو OSMAP کی سماعت میں نہیں اٹھائے گئے تھے۔ کسی نئے یا اضافی مواد کی نقول طالبعلم/طالبہ یا طالبعلم/طالبہ کے والد یا والدہ/سرپرست/نمائندے کو سماعت سے قبل فراہم کی جائیں گی، حتی کہ ناقابل عمل نہ ہو۔
5. طالبعلم/طالبہ یا طالبعلم/طالبہ کا وکیل سکول پرنسپل اور سٹاف یا سکول کی طرف سے پیش کیے گئے دیگر گواہان سے سوال پوچھنے کے قابل ہوں گے۔ طالبعلم/طالبہ کیلیئے یہ موقع ہے کہ وہ سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے سامنے پیش کی گئی معلومات کو چیلنج کر سکے۔
6. ڈویژن کونسل اور سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے ارکان کے پاس موقع ہو گا کہ سکول پرنسپل، سٹاف اور دیگر گواہان سے سوالات کریں۔
7. طالبعلم/طالبہ اور طالبعلم/طالبہ کا وکیل پھر سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے سامنے اپنا کیس پیش کریں گے، کمیٹی کے سامنے مسئلے سے متعلقہ کوئی بھی گواہان یا تحریری ثبوت سمیت پیش کریں گے۔
8. پھر انتظامیہ کو طالبعلم/طالبہ کی طرف سے پیش کیے جانے والے کسی بھی گواہان سے سوالات کرنے اور پیش کیے جانے والے موجودہ ثبوت کی تردید کی اجازت ہو گی۔
9. ڈویژن کونسل اور سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے ارکان کے پاس موقع ہو گا کہ طالبعلم/طالبہ، والد والدہ(والدین)/سرپرست(سرپرستان) اور دیگر گواہان سے سوالات کریں۔
10. انتظامیہ کو اختتامی بیان فراہم کرنے کا موقع دیا جائے گا اور OSMAP کا نمائندہ اپنے فیصلے کی وجوہات کو بیان کرے گا/گی۔
11. طالبعلم/طالبہ یا طالبعلم/طالبہ کے وکیل کے پاس اختتامی بیان دینے کا موقع ہو گا۔
J. سماعت کے بعد، سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی بند کمرے میں مشاورت کرے گی اور سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے ایجنڈے میں آخری سماعت کے بعد کھلے سیشن میں ووٹ کرے گی۔ طالبعلم/طالبہ کی رازداری کے تحفظ کی خاطر، اخراج کی تمام سماعتوں کو نمبر دیئے جائیں گے۔ سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے ووٹ کا اعلان طالبعلم/طالبہ کے نام کی بجائے طالبعلم/طالبہ کے نمبر کے ذریعے کیا جائے گا۔
K. سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی OSMAP کے سماعتی افسر کی سفارش کو مان سکتی، انکار کر سکتی یا تبدیل کر سکتی ہے اور کوئی دوسرا تادیبی عمل کا تعین کر سکتی یا اخراج کی مختلف شرط لگا سکتی۔ سکول بورڈ طالبعلم/طالبہ سے اخراج کے دوران ایک متبادل تعلیمی پروگرام میں جانے کا تقاضا کر سکتا ہے یا بصورت دیگر سکول واپسی پر ترمیم یا واپسی پر طالبعلم/طالبہ کے داخلے میں تبدیلی، یا دوبارہ داخلے کے لیے مناسب مختلف شرائط کے بارے میں فیصلہ کر سکتا ہے۔
L. اگر سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کا ووٹ متفقہ ہے تو یہ فیصلہ حتمی ہے اور اس کے خلاف اپیل نہیں ہو سکتی۔ اگر سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے فیصلے پر اتفاق نہیں ہے تو طالبعلم/طالبہ کو حق ہے کہ وہ مکمل سکول بورڈ کے سامنے تحریری درخواست جمع کرائے جیسا کہ ضابطہ 745-1"طلباء کی طویل المدت معطلی یا اخراج کی اپیلیں" میں بیان کیا گیا ہے۔
M. OSMAP والد والدہ(والدین)/سرپرست(سرپرستان) یا بالغ طالبعلم/طالبہ کو سکول بورڈ کی انضباطی کمیٹی کے فیصلے سے آگاہ کرنے کا ذمہ دار ہے۔
ایسوسی ایٹ سپرنٹنڈنٹ برائے خصوصی تعلیم اور سٹوڈنٹس سروسز (یا نامزد کردہ) اس ضابطہ کو نافذ کرنے اور اس کی نگرانی کرنے کے لئے ذمہ دار ہے۔

اس ضابطے اور متعلقہ پالیسیوں کا کم از کم پانچ سالوں میں جائزہ لیا جائے گا اور ضرورت کے مطابق دہرایا جائے گا۔

کراس حوالہ جات
731-1 - ضابطہ - طالبعلم/طالبہ کے معاملات کی اپیل
745-1 - ضابطہ - طلباء کی طویل المدت معطلی یا اخراج